اپر چترالخبریں

ملک کے دوسرے حصوں کی طرح اپر چترال میں بھی ضلعی انتظامیہ کے زیر اہتمام یوم سیاہ کشمیر منایا گیا

ملک کے دوسرے حصوں کی طرح اپر چترال میں بھی ضلعی انتظامیہ کے زیر اہتمام یوم سیاہ کشمیر منایا گیا۔

بونی (ذاکر زخمی )اپر چترال کے ہیڈکوارٹر بونی میں پروقار تقریب گورنمنٹ ہائی سکول بونی میں منعقد کی گئی۔اس تقریب میں فدالکریم ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل اپر چترال نے بطور مہمان خصوصی شرکت کی۔ اس پروگرام میں شاہ عدنان اسسٹنٹ کمشنر مستوج، ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کے سربراہان، اساتذہ کرام، مختلف طبقہ فکر سے تعلق رکھنے والے حضرات اور کثیر تعداد میں طلباء نے شرکت کی۔ پروگرام میں کشمیر کے نہتے مسلمانوں کے ساتھ ہندو سامراج کے ظلم ستم اور کشمیر پر حکومت انڈیا کے غیر قانونی مداخلت کے حوالے سے تقریریں کی گئی اور انڈین حکومت کےاس اقدام کو بھرپور انداز میں مزمت کی گئی۔ اسسٹنٹ کمشنر نے اپنے خطاب میں کہا کہ کشمیر کو پاکستان کا شہ رگ قرار دیا۔ انہون نے کہا کہ دنیا کی کوئی طاقت کشمیر کو پاکستان سے جدا نہیں کرسکتا۔ اس پروگرام کے بعد اپنے کشمیری بھائیوں کے ساتھ اظہار یک جہتی کے سلسلے میں ایک ریلی گورنمنٹ ہائی سکول بونی سے نکالی گئی اور بونی چوک پہنچ کر احتیتام پذیر ہوا۔ ریلی میں فدالکریم ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر جنرل اپر چترال، اسسٹنٹ کمشنر مستوج شاہ عدنان، مفتاح الدین ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر اپر چترال، ضلعی انتظامیہ اور محکمہ تعلیم اپر چترال کے افسران، پرنسپل صاحبان، اساتذہ کرام، طلباءو طالبات اور عام عوام نے شرکت کی۔ ریلی کےشراکاء نے کشمیر کے نہتے مسلمانوں کے ساتھ ہندو سامراج کے مظالم کی بھرپور مزمت کی گئی اور انڈیں حکومت کے خلاف نعرے لگائے گئے۔ مقررین نے کہا کہ مسلہ کشمیر کشمیری مسلمانوں کے امنگوں اور اقوام متحدہ کے قراردادوں کے مطابق حل کرنے کا مطالبہ کیا۔ ریلی کا اختیتام پاکستان ذندہ باد، ہم اپنے کشمیری مسلمانوں کے ساتھ ہیں ، کشمیر پاکستان کا حصہ ہے کے فلگ شگاف نعروں کے ساتھ اپنے اختیتام کو پہنچا۔ کسمیر بلیک ڈے کے حوالے سے ایک ریلی محمد علی ایڈیشنل اسسٹنٹ کمشنر مستوج کی سربراہی میں مستوج میں نکالی گئی اور نہتے کشمیریوں کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کیا گیا.

Back to top button