خبریںسماجی

ڈی۔پی۔او آفس لوئر چترال میں منشیات کے مقدمات میں موثر تفتیش اور منشیات فروشان کو قرار واقعی سزا دلوانے کی نسبت ایک روزہ سیمنار کا انعقاد

چترال(بشیرحسین آزاد)ڈی۔پی۔او آفس لوئر چترال میں منشیات کے مقدمات میں موثر تفتیش اور منشیات فروشان کو قرار واقعی سزا دلوانے کی نسبت ایک روزہ سیمنار کا انعقاد کیا گیا۔ جسمیں ڈی۔پی۔او لوئر چترال ناصر محمود (پی ایس پی), عدلیہ کی طرف سے سینئر سول جج چترال, ایس۔ایس۔پی انوسٹگیشین محمد خالد خان, ڈی۔پی۔پی ایاز زرین, ریٹائرڈ ڈی۔پی۔پی۔عظمت عیسیٰ تمام سرکل ایس۔ڈی۔پی۔اوز, ایس۔ایچ۔اوز ,تفتیشی آفسران اور انسپکٹر لیگل محسن الملک نے شرکت کی۔ 

سیمنار میں منشیات کے مقدمات میں جدید سائنسی طریقہ کار کے مطابق تفتیش کرنے ملزمان کو قرار واقعی سزاء دلوانے کی نسبت لیکچرز دی گئی ۔نیز تفتیش میں موجود نقائص اور پیچیدگیوں کو بھی اجاگر کرکے انھیں ختم کرکے تفتیش کو مزید موٴثر بنانے کی نسبت مقررین نے اپنے خیالات کا اظہار کیا ۔تفتیشی آفسران نے تفتیشی امور میں درپیش مشکلات سے آگاہ کیا اور سوال و جواب کا ایک سیشین بھی ہوکر سیر حاصل بحث ومباحثہ کی گئی ۔

آخر میں ڈی۔پی۔او ناصر محمود نے اپنے خطاب میں کہا کہ منشیات فروش معاشرے کے ناسور ہیں جو کسی رعایت کے مستحق نہیں ہے لہذا منشیات کے خلاف کاروائی اور تفتیش میں کسی قسم کی کوتاہی برداشت نہیں کیا جاسکتا ۔اگر منشیات کیسز میں کوئی مسائل درپیش ہوں تو ان سے ہمیں آگاہ کریں ہم پولیس ,عدلیہ اور پراسکیوشین مل بیٹھ کر اسکا حل نکالینگے۔

Back to top button