تاریخ اور ادبچترالیوں کی کامیابیخبریں

تحریک پاکستان ورکرز ٹرسٹ کے زیر اہتمام 28 ویں سالانہ عطائے گولڈ میڈل تقریب کا انعقاد، مولانا خلیق الزماں ، مولانا محمد نظام اور عرفان اللہ جان سمیت 50 کارکنان تحریک پاکستان کو گولڈ میڈل سے نوازا گیا

لاہور(نمائندہ چمرکھن ):تحریک پاکستان ورکرز ٹرسٹ کے زیرِ اہتمام کارکنان تحریک پاکستان کی عظیم خدمات کے اعتراف میں 28 ویں سالانہ عطائے گولڈ میڈل تقریب کا انعقاد ہوا۔ صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے تقریب میں خصوصی شرکت کی۔ صدر مملکت نے شاہی مسجد چترال کے خطیب مولانا خلیق، مولانامحمد نظام  اور عرفان اللہ جان کو گولڈ میڈل دیا جنہوں نے صاحب الزمان مرحوم ، مولانا قاضی صاحب نظام مرحوم اور سیف اللہ جان مرحوم کی جانب سے تحریک پاکستان میں خدمات کے اعتراف میں گولڈ میڈل وصول کیا۔ تقریب میں ملک کے چاروں صوبوں، آزاد کشمیر، چترال، کوہستان، گلگت بلتستان، بنگال اور انڈیا کے مسلم اکثریتی صوبوں سے تعلق رکھنے والے 50 کارکنان تحریک پاکستان کو گولڈ میڈلز پیش کیے گئے۔

چمرکھن سے ٹیلیفونک گفتگو سے کرتے ہوئے خطیب شاہی مسجد چترال مولانا خلیق الزماں کاکاخیل نے کہا کہ زندہ قومیں اپنے مشاہیر کو ہمیشہ یاد اور ان کے کارناموں کو اجاگر کرتی ہیں، تحریک پاکستان کا جب آغاز ہوا تو اس وقت دولت مند اور متوسط دو طبقات تھے، دولت مند طبقے نے انگریزوں کا ساتھ دیا جبکہ عام مسلمانوں نے قائداعظم کی پیروکاری میں قیام پاکستان کی جدوجہد شروع کی۔

انہوں نے کہا کہ ہمارے بزرگوں نے قائداعظم محمد علی جناح کے ساتھ کام کیا جس پر مجھے فخر ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے بزرگوں نے بڑے نامساعد حالات میں تحریک پاکستان کی جدوجہد میں حصہ لیا اور اسے کامیاب کرنے میں اپنا کردار ادا کیا۔

انہوں نے کہا کہ تحریکِ پاکستان ورکرز ٹرسٹ کا ممنون ہوں کہ اس نے پاکستان کے قیام میں حصہ لینے والے کارکنان اور ان کی اولادوں کو یاد رکھا۔ انہوں نے کہا کہ استحکام پاکستان کے لئے نئی نسل کو اپنا کردار ادا کرنا چاہئے۔

Back to top button