خبریںسماجیسیاست

گیس پلانٹ منسوخی کو عدالت میں چیلنج کرنے کے فیصلہ کی حمایت کرتے ھیں ال پارٹیز کانفرنس

چترال ٹاون میں بار کونسل اور صدر بار کونسل نیاز اے نیازی ایڈوکیٹ کی میزبانی اور دروش ایکشن فورم کے صدر رضیت باللہ کے زیر صدارت ال پارٹیز اور سول سوسائٹیز کی ایک ہنگامی میٹنگ بسلسلہ گیس پلانٹ منسوخی منعقد ھوا جس میں پاکستان مسلم لیگ ن کے عبدالولی ایڈوکیٹ جنرل سیکٹری پی ایم ایل این صفت زرین خورشید ایڈوکیٹ ساجد اللہ ایڈوکیٹ۔ پاکستان تحریک انصاف کے سنئیر نائب صدر حیات الرحمان ایڈیشنل سیکری امیر علی استاذ۔جماعت اسلامی کے وجیہہ الدین جماعت اسلامی یوتھ کے جہانزیب احمد ۔ فضل ربی پاکستان پیپلز پارٹی کے ایڈوکیٹ عالمزیب سی ڈی ایم کے وقاص احمد ایڈوکیٹ ۔ شبیر احمد سابق صدر تجار یونین۔ دروش ایکشن فورم کے عمران الملک ۔وقار احمد۔ انصار الاسلام کے اخونزدہ سیف الاسلام۔ نائب صدر لٹکوہ ڈویلپمنٹ فورم کے شاکر صاحب۔عوامی نشنل پارٹی کے جنرل سیکٹری سردار احمد خان کریم۔اباد ڈیولپمنٹ فورم کے صدر محمد عیسی خان ارکاری کے سوشل ورکر سید عنایت علیشاہ جمیعت علماء اسلام کے انفارمیشن سیکٹری قاضی نسیم تجار یونین کے سنئیر نایب صدر اظہر اقبال ۔ایڈوکیٹ تنزیل الرحمان شیخ صلاح الدین سرپرست اعلی تجار یونین عثمان الدین جمیت علماء کے صوبائ مجلس عمومی کے ممبر ا ظاہر شاہ ایڈوکیٹ۔ اور چترال پریس کلب کے عبد عفار لال نے شرکت کی۔

تمام مقررین نے اس بات پہ افسوس کیا کہ کروڑوں روپے خرچ کرکے زمین خریدی گئ جبکہ کروڑوں روپے ہی خرچ کرکے مشینری بھی دار امد کی گی اب پلانٹ سے لوگوں کو سہولت پہنچانے اور جنگلات اور جنگلی حیات کے تحفظ کے بجاے منصوبے کو ختم کرنے کی کوشیش کر ہو رہی ہے۔ مقررین نے حکومت کے فیصلے کو پشاور ھائیکورٹ میں بزریعہ شیر حیدر ایڈوکیٹ رٹ کرنے پر رضیت باللہ صدر دروش ایکشن کا شکریہ ادا کیا اور توقع کی معزز عدالت اس سلسلے میں چترال کے عوام کیساتھ انصاف کرے گا جبکہ اس بات پر بھی اتفاق ھوا کہ مالی جانی ھر صورت گیس پلانٹ کو بچانے کی کوشیش کی جاۓ اور بوقت ضرورت احتجاج کا راستہ بھی اپنایا جاۓ گا۔

Advertisement
Back to top button