اپر چترالتورکھوخبریںسماجی

فرحت حکیم کا نماز جنازہ انکے آبائی گاؤں پوہت تریچ میں ادا کی گئی۔ ایم پی اے چترال ، ڈپٹی کمشنر اپر چترال سمیت اہم شخصیات شریک۔

تریچ (ذاکر زخمی ) گزشتہ روز تورکھو رائین میں گاڑی حادثے کے نتیجے طالب علم فرحت حکیم وفات پا گئے ۔حادثے کا شکار گاڑی بونی میں زونل ٹورنامنٹ میں شرکت کے بعد سکول کے بچوں کو لیکر وپس تریچ جاتے ہوئے رائین کے مقام پر چڑھائی چڑتے ہوئے ڈرائیور سے بے قابو ہو کر گہری کھائی میں جاگری تھی جس کے نتیجے میں بارہ طالب علم زخمی بتائی گئی۔

فرہاد حکیم زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے وفات پا گئے ۔ فریاد کی والدہ پہلے ہی وفات پا چکی تھی جب کہ ولد اس وقت جیل میں قید کی سزا کاٹ رہی ہے جو بیٹے کی جنازہ کو بھی کندھا نہ دے سکے اس وقت گھر میں فرہاد کی ایک بہین اور چھوٹے بھائی ہی رہ گئےہیں۔

فرحت حکیم کی فائل فوٹو

ڈپٹی کمشنر اپر چترال محمدعلی کو حادثے کی اطلاع ملتے ہی ریسکیو 1122 کے گاڑی جائے حادثہ پہنچنے کی ہدایت کی ۔ریسکیو 1122 بغیر وقت ضایع کیے جائے حادثہ پہنچکر ریسکیو کا کام کیا۔ آج ڈپٹی کمشنر اپر چترال دعائے معفرت اور اظہار ہمدردی کے عرض ایم پی اے ہدایت الرحمن کے ساتھ مرحوم کے گاؤں پوہت تریچ پہنچے لواحقین سے اظہار ہمدردی کی اور انتہائی افسوس کا اظہار کیا۔نماز جنازہ میں ڈی سی اور ایم پی اے کے علاوه سابق تحصیل ناظم مولانا یوسف،امیر جماعت اسلامی مولانا جاوید حسین،سوشل ورکر حسین زرین کے علاوه علاقے کی لوگوں نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔ فرہاد کی ناگہانی موت پرعلاقے میں ہر کوئی اشک بار ہے۔

ڈپٹی کمشنر اپر چترال محمدعلی نے موقع پر مرحوم کی بہیں اور چھوٹے بھائی کو بونی کسی معیاری سکول میں مفت تعلیم کی سہولت فراہم کرنے کا اعلان کیا۔ڈی سی کی کردار پرعلاقے لوگ ان کی تعریف کی اور اس طرح عوام کے دکھ درد میں شریک ہوکر حوصلہ دینے پر ان کا شکریہ ادا کیا۔

Back to top button