لٹکوہلوئیر چترال

سابق ممبر ڈسٹرکٹ کونسل چترال محمد حسین کے ہاتھوں گبور کے لوگوں کی زندگی اجیرن ہوچکی ہے۔ قاضی فضل مولا۔

چترال (نمائندہ چمرکھن ) لٹکوہ گبور بخ کے رہاٸشی قاضی فضل مولا نے چترال پریس کلب میں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوۓ وزیر اعظم ، چیف آف آرمی سٹاف ، وزیر اعلی خیبر پختونخوا اور کور کمانڈر پشاور سے مطالبہ کیا ہے۔ کہ سابق ممبر ڈسٹرکٹ کونسل لٹکوہ محمد حسین کے ہاتھوں گبور کے لوگوں کی زندگی اجیرن ہو چکی ہے ۔ اس لٸے اس شخص کے شر سے گبور کے لوگوں کو نجات دلاٸی جاٸے ۔کیونکہ اس شخص کی وجہ سے آٸے روز کے فساد اور جھگڑوں سے لوگ تنگ آ کر ہجرت کرنے پر مجبور ہوۓ ہیں ۔ انہوں نے کہا اس شخص نےاپنے شاطرانہ چالوں کے ذریعے ، سرکاری اہلکاروں سے ملی بھگت کرکے سرکاری ڈسپنسری ، چیک پوسٹ اور ایک سکول کی زمین کو فروخت کر دیا ہے ۔جبکہ ڈرا دھمکا کر لوگوں سے بھتہ وصول کر رہا ہے ۔ اور خوداختیاری کرکے گبور کے گرماٸی چراگاہوں (غاری) کوقلنگ پر دے کر سالانہ دس پندرہ لاکھ ہتھیا لیتا ہے ۔حالانکہ یہ چراگاہیں مشترک ہیں لیکن حکومتی ادارے اس کے خلاف کارواٸی کی بجاٸے اس کی پشت پناہی کر رہے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ مذکورہ شخص اس حد تک خود اختیاری کر چکاہے کہ زیر استعمال مقامی روڈ پر اپنے حامی افراد کے ذریعے پودے لگا کر اس کو آمدورفت کیلٸے مکمل طور پر بند کر دیاہے ۔ جس سے لوگوں کو آمدورفت میں شدید مشکلات پیش آ رہی ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ مقامی لوگوں سے جھگڑا فساد روز کا معمول بن چکا ہے اور اپنے منفی کرتوت چھپانے کیلٸے وہ خواتین کو تھانوں اور پریس کانفرنس کیلٸے پریس کلب لانے سے بھی نہیں کتراتے اور خواتین کو ڈھال کے طور پر استعمال کرتے ہیں ۔جس کی وہ پر زور مذمت کرتے ہیں ۔

انہوں نے وزیر اعظم ، چیف آ ف آ رمی سٹاف ، وزیر اعلی خیبر پختونخوا ،کورکمانڈر پشاور سے اپیل کی کہ محمد حسین کے بیک گراونڈ اور اس کی حالیہ سرگرمیوں سے متعلق انکواٸری کی جاۓ کہ مذکورہ شخص کی وجہ سے گبور جیسے پسماندہ اور بارڈر ایریا میں مزید فساد نہ پھیلے ۔ اس شخص سے گبور کے لوگوں کو نجات دلاٸی جاٸے ۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button