خبریںنیا اضافہ

یوٹیوب نے ’شارٹس‘ پر ویڈیوز بنانے والوں کو ہزاروں ڈالر کی ادائیگی شروع کر دی

 

 

 یوٹیوب نے رواں برس کے آغاز میں اعلان کردہ فیچر ’شارٹس‘ کے صارفین کے لیے اعلان کیا ہے کہ اب وہ بھی پلیٹ فارم پر مختصر ویڈیوز اپ لوڈ کر کے اس سے آمدن حاصل کر سکیں گے۔
ویڈیو ایپلیکیشن ٹک ٹاک کے مقابل فیچر کے طور پر سامنے آنے والے ’یوٹیوب شارٹس‘ کے لیے گوگل کی ملکیتی کمپنی نے 100 ملین ڈالر کا یوٹویب شارٹ فنڈ متعارف کرایا ہے۔ اس کے ذریعے یوٹویب پر مختصر ویڈیوز بنانے والوں کو ’زیادہ انگیجنگ‘ اور ’زیادہ دیکھی جانے والی‘ ویڈیوز پر 2021 سے 2022 کے دوران ادائیگیاں کی جائیں گی۔
یوٹیوب کے اس اقدام کا مقصد ویڈیو بنانے والوں کو ’شارٹ‘ فیچر کی جانب راغب کرنا بتایا گیا ہے۔یوٹیوب کے مطابق ’شارٹ پر ویڈیوز بنانے والوں کو رواں ماہ اگست سے ادائیگیاں شروع کر دی جائیں گی۔
ہر ماہ یوٹیوب ہزاروں ویڈیو بنانے والے افراد کو فنڈ سے ادائیگی کے لیے مدعو کرے گا۔ یہ ادائیگیاں 100 ڈالر سے 10 ہزار ڈالر کے درمیان ہو سکتی ہیں۔ جس کا تعین شارٹ ویڈیوز کی انگیجمنٹ اور ویورشپ سے کیا جائے گا۔
گوگل کی ملکیتی کمپنی کی جانب سے ویڈیو بنانے والوں کو رقم کی ادائیگی کے لیے طے کی گئی شرائط بتانے سے انکار کیا گیا ہے۔ تاہم یہ واضح کیا ہے کہ ادائیگیوں کے لیے ویور شپ اور انگیجمنٹ کے نمبرز ہر ماہ تبدیل ہو سکتے ہیں۔
امریکی ٹیکنالوجی ویب سائٹ ٹیک کرنچ کے مطابق ’یوٹیوب کا کہنا ہے کہ وہ ادائیگی کے لیے معیار کا تعین اچھی کارکردگی دکھانے والے چینلز کے جائزے کی بنیاد پر کرے گی۔ اس کے بعد ان کو دیے جانے والے بونس کا تعین ویوز، آڈینس کے ملک و شہر وغیرہ کی بنیاد پر کیا جائے گا۔یوٹیوب کے مطابق وہ زیادہ سے زیادہ ویڈیو بنانے والوں کو ادائیگی کرنا چاہتی ہے اسی لیے کم از کم رقم 100 ڈالر رکھی گئی ہے۔

یوٹیوب سے کسے رقم ملے گی؟

یوٹیوب کے شارٹس فنڈ سے رقم انہیں ملے گی جو اوریجنل مواد تیار کریں گے۔ دوسرے چینلز یا سوشل پلیٹ فارمز کی ویڈیوز کو نئے سرے سے اپ لوڈ کرنے والوں کو ادائیگی نہیں کی جائے گی۔
یوٹیوب شارٹس سے آمدن کے لیے ضروری ہے کہ کری ایٹرز کی عمر 13 برس یا زائد ہو۔13 تا 18 برس کی عمر کے افراد کے لیے ضروری ہو گا کہ ان کے والدین یا گارڈین کی جانب سے ایڈسینس اکاؤنٹ ترتیب دیا گیا ہو، اس اکاؤنٹ کو کری ایٹرز کے چینل سے لنک کر کے پہلے سے بتائی گئی شرائط قبول کی گئی ہوں۔
یوٹیوب صارفین کو ادائیگی اسی طریقے سے کرے گا۔
یوٹیوب کے مطابق ہر ماہ بونس کے تعین کے لیے صرف اسی ماہ اپ لوڈ ہونے والی ویڈیوز ہی نہیں بلکہ چینل پر موجود تمام نئی اور پرانی ویڈیوز کے ویوز کو پرکھا جائے گا۔چینل کے لیے لازم ہے کہ اس نے گزشتہ 180 روز میں کم از کم ایک ’شارٹ‘ اپ لوڈ کی ہو اور یوٹیوب کی کیمونٹی گائیڈلائنز، کاپی رائٹ قوانین اور مونیٹائزیشن پالیسز کا دھیان رکھا ہو۔

یوٹیوب شارٹس کیا ہے؟

گوگل کی ملکیتی ویڈیو ویب سائٹ یوٹیوب کے ’شارٹس‘ کو رواں برس مارچ میں امریکہ میں متعارف کرایا گیا تھا۔ یہ لپ سنگنگ ویڈیوز کے مقبول پلیٹ فارم ٹک ٹاک ہی کی طرح کی ایک ایپلیکیشن ہے، جہاں ویڈیوز کی صورت میں کنٹینٹ اپ لوڈ کرنے والے یوزرز ساؤنڈ اور میوزک کے ساتھ 60 سیکنڈ دورانیے کی مختصر ویڈیو اپ لوڈ کرتے ہیں۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔

Back to top button